صوبائی وزیر ابتدائی و ثانوی تعلیم اکبر ایوب خان نے کہا ہے کہ کچھ عناصر سوشل میڈیا پر پرانی ویڈیو چلا کر سستی شہرت حاصل کرنا چاہتے ہیں انہوں نے کہا کہ ختم نبوت کے متعلق سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی ویڈیو پرانی ہے اور کچھ لوگ غلط طور پر اس کو پیش کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گریڈ-4 اسلامیات کی کتاب میں 2019 میں اسلامیات کے سبجیکٹ سپیشلسٹ سے غلطی ہوئی تھی۔وہ کتابیں مارچ 2019 کو سکولوں میں تقسیم کی گئی تھی تاہم مئی سے پہلے وہ کتابیں تمام سکولوں سے واپس کرکے ان کو نئی کتابیں دی گئی اور اس اسلامیات کے سبجیکٹ اسپیشلسٹ کے خلاف ای اینڈ ڈی رولز 2011 کے تحت کاروائی کی گئی۔

اکبر ایوب خان نے کہا کہ امسال21 -2020 میں اسلامیات کی کتاب برائے گریڈ-4 اور دیگر تمام کورسز ہر قسم کی غلطیوں سے پاک ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت ہمارا ایمان کا حصہ ہے اور ہم اپنے طلباء کو دنیاوی تعلیم کے ساتھ ساتھ دینی علوم سے بھی آراستہ کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کسی کو بھی ایسی غلطی کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی جس سے ہمارے دین و ایمان کو خطرہ ہو۔اکبر ایوب خان نے کہا کہ ہماری حکومت پچھلے حکومتوں کی نسبت زیادہ کوشش کر رہی ہیں کہ بچوں کو زیادہ سے زیادہ اسلامی تعلیمات دی جائے تاکہ ہماری آنے والی نسلیں قرآن و سنت کے مطابق اپنی زندگیاں بسر کر سکیں۔

وزیر تعلیم نے کہا کہ سوشل میڈیا پر پرانی ویڈیوز اور غلط خبریں چلا کر عوام کو گمراہ کرنے سے گریز کیا جائے